55 سال بعد انگلینڈ نے ڈنمارک کو ہرا کر فائنل کا ٹکٹ خریدا

میکل ڈیمس گارڈ فری کک کے ذریعے ڈنمارک کی جانب سے گول کرتے ہوئے. جبکہ نیچے ہیری کین پنالٹی کک لیتے ہوئے دیکھے جا سکتے ہیں

(ویمبلے). انگلینڈ میں کھیلے گئے گزشتہ رات سیمی فائنل مقابلے میں انگلینڈ کی قومی فٹبال ٹیم نے ڈنمارک کو ایکسٹرا ٹائم میں 2-1 سے شکست دے کر فائنل میں جگہ بنائ ہے. 55 سال بعد یہ پہلا موقع ہے جب کہ انگلینڈ کی ٹیم نے کسی بھی ٹورنامنٹ میں فائنل میں جگہ بنائی ہے. اس سے پہلے متعدد بار وہ فائنل سے ہی پہلے گھر واپس لوٹ گئی ہے. آخری بار فیفا ورلڈ کپ 2018 میں وہ کروشیا کے ہاتھوں 2-1 سے شکست کھا کر سیمی فائنل سے ہی باہر ہو گئی تھی.
فیفا رینکنگ میں 10 ویں پائیدان پر موجود ڈنمارک کی ٹیم نے کافی مضبوطی سے انگلینڈ کو پورے میچ میں روکے رکھا. اور کاؤنٹر اٹیک کے ذریعے گول کرنے کی کوشش بھی کرتی رہی. جس کا فائدہ اسے 30 ویں منٹ پر فری کک کے ذریعے ملا جسے میکل ڈیمس گارڈ نے کامیابی سے گول میں تبدیل کیا. پہلے ہاف کے اختتام سے قبل کجائر کے خطرناک خودکش گول نے انگلینڈ کو 1-1 کی برابری پر لا کھڑا کیا.
دوسرے ہاف میں کوئی بھی ٹیم گول نہیں کر سکی اور اختتام سے پہلے انگلینڈ نے کئی مرتبہ گول کرنے کی کوشش کرے لیکن سب بے سود رہا.
ایکسٹرا ٹائم میں 104 منٹ میں ڈی باکس میں انگلینڈ کو سپر اسٹرائکر عبدالرحیم اسٹیرلنگ کو گرانے کی وجہ سے پنالٹی کک ملی. حالانکہ ڈینش گولکیپر نے اسے آسانی سے بچا لیا تھا. لیکن بال ہاتھ سے چھوٹ جانے کی بدولت ہیری کین نے دوبارہ بال کو نیٹ میں الجھا دیا.

انگلینڈ کا اب اگلا مقابلہ فائنل میں اٹلی کے ساتھ ١۲ جولائی بروز اتوار کو ویمبلے اسٹیڈیم میں ہوگا. جس نے 32 سال بعد اسپین کو ہرا کر یورو کپ 2020 کے فائنل کا ٹکٹ خریدا.

Latest Indian news

Popular Stories

error: Content is protected !!