اندور میں خوفناک سڑک حادثہ: آٹھ کی موت

اندور۔ اندور-احمد آباد قومی شاہراہ پر گزشتہ رات پیش آنے والے ہولناک حادثے کی تصویریں سامنے آئی ہیں۔ ان کو دیکھ کر حادثے کی شدت کا اندازہ لگایا جا سکتا ہے۔ آٹھ افراد موقع پر ہی دم توڑ گئے۔ آپ کو بتا دیں کہ حادثہ چہارشنبہ کی رات تقریباً 10.30 بجے گھٹابیلاؤڈ کے قریب پیش آیا۔ پولیس کو رات کو اطلاع ملی تھی۔ موقع پر موجود لوگوں نے بتایا کہ کار ایم پی 43 بی ڈی 1005 میں نو افراد سوار تھے۔ جو تیز رفتاری کے ساتھ سڑک کے کنارے ریت سے بھرا ڈمپر کھڑا تھا جس کی وجہ سے کار پیچھے سے ٹکرا گئی۔ حادثہ اتنا خطرناک تھا کہ کار مکمل طور پر کچل گئی۔ اس میں بیٹھے لوگ اس میں پھنس گئے۔ حادثے کے بعد پولیس موقع پر پہنچ گئی اور لوگوں کو نکالنے کی کوشش شروع کر دی۔ لاشیں اتنی بری طرح پھنسی ہوئی تھیں کہ انہیں نکالنے کے لیے پولیس کو کافی جدوجہد کرنا پڑی۔ لاشوں کی تصویریں خوفناک تھیں۔ مدھیہ پردیش پولیس نے بتایا کہ اندور-احمد آباد قومی شاہراہ پر گھٹابیلود کے قریب ایک جیپ نامعلوم گاڑی سے ٹکرا گئی۔ ایڈیشنل سپرنٹنڈنٹ آف پولیس (اے ایس پی) روپیش کمار دویدی نے کہا حادثے میں آٹھ افراد کی موت کی تصدیق کی گئی ہے، جب کہ ایک شخص زخمی ہے۔ خدشہ ظاہر کیا جا رہا ہے کہ ڈمپر ریت سے بھرا ہوا تھا، کیونکہ جائے حادثہ پر ریت بکھری ہوئی ہے۔ پولیس نے بتایا کہ اطلاع ملی ہے کہ یہ لوگ باغ ٹنڈہ سے گنا جا رہے تھے کہ حادثہ کا شکار ہو گئے۔ واقعے کے بعد گاڑی جس سے ٹکرائی اس کا ڈرائیور فرار ہوگیا۔ مرنے والوں میں سے ایک کملیش کے پاس سے پولیس کارڈ بھی ملا ہے۔ اس میں شیو پوری میں پوسٹنگ کا معاملہ سامنے آیا ہے۔ فی الحال پولس معاملے کی چھان بین کر رہی ہے اور نامعلوم گاڑی کی تلاش کر رہی ہے۔

بہ شکریہ سی جی سندیش

Latest Indian news

Popular Stories

error: Content is protected !!