ڈبلیو ایچ او WHO کے ‘بھارت میں 47 لاکھ اموات’ کے دعوے پر کرناٹک کے وزیر صحت برہم، جانئے وزیر نےکیا کہا

بنگلورو 7 مئی: کرناٹک کے وزیر صحت کے سدھاکر نے عالمی ادارہ صحت (ڈبلیو ایچ او) کی ہندوستان کی COVID-19 اموات کی تعداد پر عالمی ادارہ صحت کی رپورٹ پر جاری تنازعہ کے درمیان رد عمل ظاہر کیا ہے۔ ڈبلیو ایچ او نے دعویٰ کیا ہے کہ بھارت میں کورونا سے 5 لاکھ نہیں بلکہ 47 لاکھ اموات ہوئی ہیں۔ ڈبلیو ایچ او کے اس دعوے پر کرناٹک کے وزیر صحت کے سدھاکر برہم ہوگئے ہیں اور الزام لگایا ہے کہ عالمی ادارہ صحت (ڈبلیو ایچ او) نے بغیر کسی سائنسی ثبوت اور عقلی دلیل کے کہا ہے کہ ہندوستان میں کووڈ-19 سے ہونے والی اموات کی تعداد جو درج کی گئی ہے، وہ نہیں ہے۔ ‘ہندوستان میں ہر موت کو سائنسی طور پر ریکارڈ کیا گیا ہے…’
کرناٹک کے وزیر صحت کے سدھاکر نے کہا کہ اس ملک میں ہر موت کو سائنسی طور پر ریکارڈ کیا گیا ہے۔ ان کا مزید کہنا تھا کہ ہندوستان میں ہر موت سب سے زیادہ بکھرے ہوئے انداز میں ریکارڈ کی جاتی ہے۔ انیوز ذراٸع سے بات کرتے ہوئے، انہوں نے کہا، ‘ڈبلیو ایچ او نے بغیر کسی سائنسی ثبوت اور دلیل کے کہا ہے کہ ہندوستان میں کووڈ-19 سے ہونے والی اموات کی تعداد اصل تعداد نہیں ہے۔ یہاں موجود تمام وزرائے صحت نے مذمتی قرارداد پاس کی ہے۔
کے سدھاکر نے کہا، "ہم اپنی تعداد پر قائم رہتے ہیں کیونکہ یہ عمل اور اعداد و شمار ہندوستان نے ہمیشہ اپنایا ہے۔ اس ملک میں ہر موت کو سائنسی طور پر ریکارڈ کیا گیا ہے۔ ہر موت ہندوستان میں سب سے زیادہ بکھرے ہوئے انداز میں ریکارڈ کی جاتی ہے۔

اس سے قبل جمعہ (06 مئی) کو سنٹرل کونسل فار ہیلتھ اینڈ فیملی ویلفیئر (CCHFW) کی کانفرنس میں ایک قرارداد منظور کی گئی تھی، جس میں عالمی ادارہ صحت کے ہندوستان میں 4.7 ملین کورونا اموات کے تخمینے پر سخت اعتراض کیا گیا تھا۔ گجرات کے کیواڈیا میں صحت اور خاندانی بہبود کی 14ویں سنٹرل کونسل (CCHFW) میں مرکزی وزیر صحت منسکھ منڈاویہ کی صدارت میں منعقدہ کانفرنس کے دوران کورونا سے ہونے والی اموات سے متعلق ڈبلیو ایچ او کا معاملہ اٹھایا گیا۔ ذرائع نے مزید کہا کہ ڈبلیو ایچ او کے اندازے غلط ہیں اور یہ تخمینہ ہندوستان کے لیے ناقابل قبول ہے۔

Latest Indian news

Popular Stories

error: Content is protected !!